7

شقی القلب باپ نے 13 سالہ بیٹی کو زندہ دفنا دیا

سفاک باپ نے بیٹی کو بے ہوش کر کے 5 فٹ گہرے گڑھے میں دفن کردیا۔ فوٹو : فائل

غزہ سٹی: فلسطین میں سفاک باپ نے اپنی 13 سالہ بیٹی کو بے ہوش کرکے ڈیڑھ میٹر گہرے گڑھے میں زندہ دفنا دیا۔

عرب میڈیا کے مطابق غزہ کی پٹی کے ایک گاؤں میں رواں برس ستمبر میں 13 سالہ ایمان اچانک لاپتہ ہوگئی تھی، والد کا کہنا تھا کہ لڑکی اپنی بیمار ماں کی عیادت کے لیے اردن چلی گئی ہے تاہم چھوٹی بہن کو شک ہوا اور اس نے اپنی ٹیچر کو بتایا۔

اسکول ٹیچر نے بچوں کی بہبود کیلیے کام کرنے والے ادارے کو مطلع کیا جس پر باپ سے پوچھ گچھ کی گئی کیوں کہ دعوے کے برعکس ایمان کے سرحد عبور کرنے کے شواہد نہیں مل سکے تھے۔ پولیس کی تفتیش کے دوران باپ نے بیٹی کو گھر کے نزدیک ڈیڑھ میٹر گہرے گڑھے میں زندہ دفن کرنے کا اعتراف کرلیا۔

52 سالہ سفاک باپ کو اپنی بیٹی ایمان کو نشہ آور چیز پلا کر بے ہوش کردیا تھا اور پھر اسے گڑھے میں پھینک کر دفنا دیا تھا، ایمان اپنی بیمار ماں کی دیکھ بھال کیلیے اردن جانے کی ضد کر رہی تھی۔ سفاک باپ کو قتل کے جرم میں باقاعدہ حراست میں لے لیا گیا ہے۔





Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں