4

دہلی تشدد کے خلاف پرینکا گاندھی کی قیادت میں کانگریس سڑک پر اتری

نئی دہلی: 26فروری(بی این ایس )
دہلی تشدد کی مخالفت میں کانگریس نے بدھ کو پارٹی ہیڈکوارٹر سے مارچ نکالا۔کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی کی قیادت میں نکالے گئے مارچ کو گاندھی سمادھی تک جانا تھا، لیکن اس سے پہلے ہی جن پتھ راستے پر انہیں دیا گیا۔نارتھ ایسٹ دہلی کے کچھ علاقوں میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف پرامن احتجاج کے دوران دوسری طرف سے جم کر تشددکیاگیا جس میں27 لوگوں کی موت ہو گئی۔ کانگریس نے تشدد پر تشویش ظاہر اور مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ کا استعفیٰ بھی مانگا۔پرینکا گاندھی کے علاوہ مارچ میں شامل ہونے والے دیگر رہنماؤں میں مکل واسنک، کے سی وینو گوپال، پی ایل پنیا، رندیپ سرجیوالا، اجے سنگھ للو (یوپی کانگریس کے سربراہ)، منی شنکر ایئر، سشمیتا دیو، کرشنا تیرتھ اور سبھاش چوپڑا رہے۔پارٹی ہیڈکوارٹر سے شروع ہوئے مارچ کو تیس جنوری راستے واقع گاندھی تک جانا تھا، لیکن پولیس نے کانگریس لیڈروں کو گاندھی سمادھی پہنچنے سے پہلے ہی روک دیا۔ اس کے بعد پارٹی لیڈر سڑک پر ہی بیٹھ گئے۔کانگریس کی عبوری صدر سونیا گاندھی نے بدھ کو پریس کانفرنس کی اور دہلی کی صورت حال پر تشویش کا اظہار کیاہے۔ سونیا گاندھی نے کہا کہ دہلی کی موجودہ حالات تشویش ناک ہے۔ ایک سازش کے تحت حالات بگڑے۔ بی جے پی لیڈروں نے اشتعال انگیز تقریریں کی ہیں۔ انتخابات کے دوران نفرت پھیلائی ہے۔ دہلی کی صورت حال کے لیے مرکزی سرکار اور وزیر داخلہ امت شاہ ذمہ دارہیں۔ وزیر داخلہ کو استعفیٰ دینا چاہیے۔





Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں