4

صحافی رعنا ایوب کے خلاف شکایت درج

ممبئی:26فروری(بی این ایس )
شہر کے رہنے والے ایک شخص نے دہلی فسادات کو لے کر صحافی رعنا ایوب کی طرف سے ٹویٹر پر پوسٹ ویڈیو کا حوالہ دیتے ہوئے شکایت درج کروائی ہے۔ ممبئی پولیس کی سائبر سیل اس کیس میں تحقیقات کر رہی ہے۔شکایت کنندہ رمیش سولنکی(50)نے دعویٰ کیا ہے کہ صحافی نے معاشرے میں نفرت پھیلانے اور دہلی تشدد میں آگ میں گھی ڈالنے کے ارادے سے پوسٹ کیاہے۔ سولنکی نے آن لائن کی گئی شکایت کے بعد صحافی رعنا ایوب کی تصویر بھی اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر اپ لوڈ کی ہے۔اپنے ٹویٹر پر سولنکی نے لکھا ہے کہ براہ مہربانی اس رعنا ایوب کے خلاف کارروائی کریں۔ رعنا ایوب کی طرف سے شیئرکی گئی ویڈیوزدو سال پرانی ہیں اور وہ اسے دوبارہ موجودہ حالت میں شیئر کر رہی ہیں، جو سماج میں نفرت پھیلانے اور لوگوں کواکسانے کی کوشش ہے۔انہوں نے مزید لکھا ہے کہ رعناایوب جھوٹی افواہوں کو پوسٹ کرنے اور بھارت اور بھارت حکومت کو بدنام کرنے کے لیے باقاعدگی سے کام کرتی رہی ہیں، ملک میں فرقہ وارانہ بدامنی پیدا کرنے میں کامیاب ہونے سے پہلے ان کے خلاف قانونی کارروائی ضروری ہے۔ممبئی سائبر جرائم سیل کے ایک سینئر افسر نے کہا کہ کوئی بھی کارروائی کرنے سے پہلے ہم اس ویڈیو کی تصدیق ضرور کریں گے۔ انہوں نے کہاہے کہ اگر ضرورت پڑی تو ہم شکایت کومزیدتحقیقات کے لیے متعلقہ پولیس اسٹیشن منتقل کر دیں گے۔25 فروری کو ٹوئٹر ہینڈلRanaAyub پر پوسٹ کی گئی 45-سیکنڈ کی ایک ویڈیو کلپ میں کچھ لوگوں ایک مذہبی مقام میں توڑ پھوڑ کرتے نظر آ رہے ہیں۔ ویڈیوپوسٹ کرنے کے بعد رعنا ایوب نے پہلے اسے ٹوئٹر سے ہٹا لیا تھا اور پھر اسے صحیح ویڈیوز بتاتے ہوئے دوبارہ ٹویٹر پر ڈالا۔





Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں