4

کانگریس نے نتیش کمارسے سی اے اے کے خلاف بھی تجویزمنظورکرنے کامطالبہ کیا

پٹنہ: 26فروری(بی این ایس )
وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے بہار اسمبلی سے این آرسی اور نئے این پی آر کے خلاف قرارداد منظور کراکر اپوزیشن کے پاس سے ایک بڑا مسئلہ چھین لیاہے۔گرچہ این پی آرپرانے فارمیٹ میں بھی سوالوں کے گھیرے میں ہے۔اورڈی ووٹرکی وجہ سے اسے نتیش کمارکاجھانسہ سمجھارہاہے۔ کل تک این آرسی اور این پی آر پر این ڈی اے کو گھیرنے والا اپوزیشن اب نتیش کمار سے پوچھ رہا ہے کہ وہ سی اے اے کی حمایت کیوں کر رہے ہیں؟بدھ کو بجٹ سیشن میں شامل ہونے اسمبلی پہنچے کانگریس لیڈر پریم چندمشرا نے نتیش سے پوچھا کہ وہ این آرسی اوراین پی آر کی مخالفت کر رہے ہیں لیکن سی اے اے سے محبت کیوں ہے؟ وہ اس بات کا جواب دیں کہ سی اے اے کے سپورٹ میں کیوں ہیں۔سی اے اے-این آرسی اور این پی آر میں کوئی فرق نہیں ہے۔
حکومت سی اے اے کے خلاف بھی ایوان میں قرارداد منظور کرائے۔این آرسی اور این پی آر کے خلاف قرارداد منظور کرانے والابہارپہلی این ڈی اے حکومت ریاست ہے۔ منگل کو بجٹ سیشن کے دوسرے دن متفقہ طور پر اس تجویز کو منظورکیاگیا۔بہارمیں 2010 کے فارمیٹ پر ہی این پی آر (نیشنل پاپولیشن رجسٹر) ہوگا۔ اس میں صرف مخنث کے کالم کو شامل کیا جائے گا۔ منگل کو اسمبلی کی کارروائی شروع ہونے کے بعد ہی اپوزیشن اس بات کو لے کر مسلسل ہنگامہ کر رہا تھا کہ حکومت این پی آر کو لے کر اپنی پوزیشن واضح کرے۔ سشیل مودی کے بجٹ تقریر کے بعد اسمبلی کے صدر وجے چودھری نے این آرسی لاگونہیں کرنے سے متعلق تجویز دی، جس پر تمام جماعتوں نے اتفاق کیا۔





Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں