ٹرین منسوخ ہونے کے بعد فٹ پاتھ پر سونے پر مجبور مہاجر مزدور کرائے کے گھر میں بھی ٹھکانہ نہیں


ممبئی،23 ؍مئی (بی این ایس )
ممبئی کے وڈالا ٹرک ٹرمینل پولیس اسٹیشن کے باہر تقریبا سینکڑوں مہاجر مزدور جمع ہیں۔یہ مزدور گزشتہ تین دنوں سے یہیں فٹ پاتھ پر سو رہے ہیں اور ان کی تعداد مسلسل بڑھ رہی ہے۔ان کا دعوی ہے کہ پولیس نے ان سے کہا تھا کہ انہیں ان کے آبائی ریاست بھیجنے کے لئے خاص ٹرینوں کا انتظام کیا گیا ہے لیکن بعد میں ان سے کہہ دیا گیا کہ ان کی ٹرینیں منسوخ ہو گئی ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ گزشتہ کچھ دنوں سے پولیس اہلکار مزدوروں کو ٹرین سے بھیجنے کے لئے بلا رہے ہیں۔لوگ اپنا کرایہ والا گھر چھوڑ کر آ رہے ہیں اور بعد میں کہہ دیا جاتا ہے ٹرین منسوخ ہے۔ بڑے پیمانے پر لوگ وہاں جمع ہوئے ہیں اور لوگ فٹ پاتھ پر رہنے پر مجبور ہیں۔ان کے سامنے ابھی مسئلہ یہ ہے کہ وہ اب اپنے کرایہ کے گھروں میں نہیں آ سکتے کیونکہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے ان کی نوکری چلی گئی تو انہوں نے گھر جانے کی امید میں اپنی پوری گرہستی سمیٹ لی تھی۔ان مزدوروں میں ایک نو ماہ کی حاملہ عورت بھی شامل ہے، جو تین دنوں سے یوں ہی سڑک پر رہ رہی ہیں۔خاتون کا کہنا ہے کہ میرا مالک مکان کرایہ مانگ رہا ہے۔ہمارے پاس فٹ پاتھ پر رہنے کے علاوہ اور کوئی راستہ نہیں ہے۔ہم کرایہ کے گھروں میں نہیں آ سکتے۔ اتر پردیش کے پرتاپ گڑھ کے وریندر کمار نے بتایاکہ مجھے اترپردیش جانا ہے۔ہر روز ہمیں بتایا جاتا ہے کہ ٹرینیں منسوخ ہو گئی ہیں۔پھر ہمیں متعلقہ حکام سے بات کرنے کو کہا جاتا ہے۔ہمارے پاس کھانے کو نہیں ہے۔مالک مکان اب ہمیں رہنے نہیں دے رہا۔ہم کیا کریں؟ ایک اور مزدور نے کہاکہ ہمیں بلانے کے لئے تو وہ میسج دے دیتے ہیں، لیکن ٹرینیں منسوخ ہوتی ہیں تو نہیں بتاتے۔آج صبح مجھے ایک فون آیا کہ ٹرینیں چلیں گی، جب ہم یہاں آئے تو ہمیں بتایا گیا ٹرینیں منسوخ ہو گئی ہیں۔ کورونا کی وجہ سے مارچ میں لاک ڈاؤن شروع ہونے کے بعد سے ملک بھر میں لاکھوں مزدور، طالب علم اور سیاح الگ الگ جگہوں پر پھنس گئے ہیں۔ مہاجر مزدور کسی طرح اپنے گھر پہنچنے کی کوشش کر رہے ہیں۔وہ سینکڑوں کلومیٹر پیدل تک چلنے کو تیار ہیں۔ایسے میں بہت سے مزدوروں کی موت بھی ہو گئی ہے۔ایسے واقعات میں گزشتہ دو ہفتوں میں 50 مزدوروں کی موت کی خبر ہے۔ واضح رہے کہ مہاراشٹر میں کورونا مریضوں کی تعداد سب سے زیادہ ہے۔یہاں اب تک 44000 سے زیادہ مثبت معاملے سامنے آئے ہیں، 1500 سے زائد اموات ہوئی ہیں۔مہاراشٹر میں سب سے زیادہ معاملے ممبئی میں ہیں، جہاں اب تک 27000 کیس سامنے آئے ہیں۔





Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *