کراچی میں 2700 مربع کلومیٹر جنگلات کی زمین ہے، جنگل آدھا رہ گیا، معاون خصوصی


پنجاب اور خیبرپختونخوا میں ایک لاکھ 60 ہزار ایکڑ سرکاری زمین پرقبضہ ہے، ملک امین اسلم— فوٹو:فائل
پنجاب اور خیبرپختونخوا میں ایک لاکھ 60 ہزار ایکڑ سرکاری زمین پرقبضہ ہے، ملک امین اسلم— فوٹو:فائل 

وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے تبدیلی ملک امین اسلم نے کہا ہے کہ پنجاب اور خیبرپختونخوا میں ایک لاکھ 60 ہزار ایکڑ سرکاری زمین پرقبضہ ہے جبکہ ڈیجیٹل نقشے تیار کرلیے ہیں جن کی بنیاد پر قبضہ مافیا کے خلاف آپریشن کیا جائے گا۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ملک امین اسلم کا کہنا تھا کہ اب ہمارے پاس ڈیجیٹل میپ موجود ہیں جو سرکاری املاک کی نشاندہی کررہے ہیں، کس نے سرکاری زمینوں پر قبضہ کیا ہوا ہے اس کا ریکارڈ آگیا ہے۔

ان کا کہنا تھاکہ اسٹیٹ لینڈ کے اندرکے 50 ہزار اسکوائر کی میپنگ کرلی گئی ہے، پنجاب اور خیبرپختونخوا میں ایک لاکھ 60 ہزار ایکڑ پر مشتمل 500 ارب روپے کی زمین پر قبضہ ہے۔

معاون خصوصی کا کہنا تھاکہ اسٹیٹ لینڈ کے اندر دریاؤں کی زمین، واپڈا سمیت ہرجگہ قبضہ مافیا موجود ہے، ہمارے جنگلات 30 ہزار اسکوائر کلومیٹر پرقائم ہیں جس میں 10 ہزار اسکوائر کلومیٹر پرقبضہ ہے، بہت سی جگہوں پر زمین لے کر اس پر فصلیں لگا دی گئی ہیں۔

ان کا کہنا تھاکہ کراچی میں 2700 مربع کلومیٹر جنگلات کی زمین ہے، جنگل نصف پر رہ گیا ہے، ماضی میں حکومتیں مکمل خاموشی رہی ہیں۔

معاون خصوصی نے کہا کہ اب قبضہ مافیا اپنے لیے خطرے کی گھنٹی سمجھے، کس نے قبضہ کیا، کتنا قبضہ کیا اور کب سے کیا اب یہ ڈیٹا ہمارے پاس موجود ہے۔



Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published.