مالک مکان نے 4 سال بعد بہن بھائی کے قتل کا اعتراف کرلیا


مغوی و مقتول کی ہمشیرہ کو اس لیے قتل کیا تووہ جانتی تھی کہ مغوی اس کے ساتھ گیا تھا، ملزم کا بیان. :فوٹو:فائل

مغوی و مقتول کی ہمشیرہ کو اس لیے قتل کیا تووہ جانتی تھی کہ مغوی اس کے ساتھ گیا تھا، ملزم کا بیان. :فوٹو:فائل

 راولپنڈی:  تھانہ جاتلی کے علاقے سے چار سال قبل اغواءہونے شہری اور اس کی بہن کے قتل میں ملوث مالکان مکان نے اعتراف جرم کرلیا۔ 

ایکسپریس نیوز کے مطابق راولپنڈی کے تھانہ جاتلی کے علاقے سے چار سال قبل اغواء ہونے والے شہری کی مکان کی کھدائی کے دوران نعش کی باقیات ملی تھیں، نعش کی باقیات ملنے کے بعد حراست میں لیے جانے والے مالک مکان ملزم نے سنسنی خیز انکشافات کئے ہیں۔

پولیس حکام کے مطابق اغواء اور قتل کے الزام میں گرفتار ملزم نے نہ صرف مغوی بلکہ اس کی ہمشیرہ کے قتل کا بھی اعتراف کرلیا اور بتایا کہ مغوی کو تیز دار آلے اور تقریبا چار ماہ بعد ہمشیرہ کو ڈنڈوں سے وار کرکے قتل کیا، مغوی و مقتول کی ہمشیرہ کو اس لیے قتل کیا تووہ جانتی تھی کہ مغوی اس کے ساتھ گیا تھا۔

پولیس حکام نے  بتایا کہ 2017 میں قوت و گویائی و سماعت سے محروم مغوی کے اغواء کا مقدمہ اس کے بھائی کی ہی مدعیت میں درج کیا گیا تھا، جب کہ اس کی ہمشیرہ کے قتل کا مقدمہ مغوی کے اغواء ہونے کے چار ماہ بعد نامعلوم ملزمان کے خلاف درج کیا گیا، مقتول کی نعش کی شناخت اس کے بھائی نے زیر استعمال انگوٹھی اورمصنوعی دانت سے کی تھی، نعش کی باقیات ملنے پر پولیس ندیم نامی ملزم جو چار سال قبل بھی شامل تفتیش رھا کو تحویل میں لے کر تفتیش شروع تھی، ملزم کے دوہرے قتل کے انکشافات کی روشنی میں تفتیش کا دائرہ وسیع کردیا گیا ہے۔

 





Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *