کسانوں نے ممبئی جا رہی کنگنا رانوت کو روپڑ میں روکا، معافی مانگنے پر کیا مجبور


تقریباً دو گھنٹے تک زبردست ہنگامہ کے بعد پولیس اہلکار ایک خاتون مظاہرین کو کنگنا کی گاڑی کے پاس لے کر گئے، کنگنا نے اس سے معافی مانگی، پھر کسانوں نے کنگنا کے قافلے کو آگے بڑھنے کی اجازت دی۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

Engagement: 0

متنازعہ زرعی قوانین کے خلاف کسان تحریک سمیت مختلف ایشوز پر اپنے بیانات سے تنازعہ کھڑا کرنے والی اداکارہ کنگنا رانوت کو جمعہ کے روز پنجاب میں کسانوں کی زبردست مخالفت کا سامنا کرنا پڑا۔ جمعہ کو منالی سے ممبئی جاتے وقت پنجاب کے روپڑ کے پاس کنگنا رانوت کے قافلے کو کسانوں نے گھیر لیا۔ اس دوران کسانوں نے کنگنا سے ان کے بیانات کے لیے معافی کا مطالبہ کرتے ہوئے خوب نعرے بازی کی۔

کیرت پور صاحب ٹول پلازہ پر کشیدگی بڑھتی دیکھ موقع پر کثیر تعداد میں پولیس فورس کو بلا لیا گیا۔ کافی دیر تک ہنگامہ ہوتا رہا۔ آخر کار تقریباً دو گھنٹے تک زبردست ہنگامہ کو دیکھ کر پولس اہلکار ایک خاتون مظاہرین کو کنگنا کی گاڑی کے پاس لے کر گئے۔ کنگنا نے اس خاتون احتجاجی سے معافی مانگی، جس کے بعد کسانوں نے کنگنا کے قافلے کو آگے بڑھنے کی اجازت دی۔

کسانوں کے اس مظاہرے میں بڑی تعداد میں خواتین بھی موجود تھیں اور وہ بھی کنگنا کے خلاف نعرے لگا رہی تھیں۔ مظاہرین کسانوں کا کہنا تھا کہ کنگنا رانوت نے کئی بار کسانوں، کسان تحریک اور یہاں تک کہ خاتون کسانوں کے بارے میں بھی غلط الفاظ کا استعمال کیا اور غلط بیانات دیے۔ ایسے میں جب تک وہ معافی نہیں مانگیں گی، ان کے قافلے کو آگے نہیں جانے دیا جائے گا۔ آخر کار کنگنا کو کسانوں سے معافی مانگنی ہی پڑی۔

غور طلب ہے کہ متنازعہ زرعی قوانین کے خلاف چل رہی تحریک کے بارے میں کنگنا نے کئی متنازعہ بیانات دیے ہیں۔ کسان تحریک کے شروع میں کنگنا نے اپنے ٹوئٹر ہینڈل پر ایک بزرگ خاتون کی تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا تھا کہ ایسے لوگ کچھ روپے لے کر تحریک میں پہنچ جاتے ہیں۔ اس کے بعد ایک بار کنگنا نے مظاہرین کسانوں کو خالصتانی دہشت گرد بھی کہا تھا۔ کنگنا کے ایسے تبصرو کے بعد سے کسانوں اور پنجاب میں ان کے خلاف زبردست غصہ ہے۔ ان کے خلاف کئی معاملے بھی درج کروائے گئے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔




Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *