کورونا پروٹوکول کے باعث عازمین حج کے امبارکیشن پوائنٹس کم ہوئے:نقوی


امبارکیشن پوائنٹس کی فہرست میں چنئی کو شامل نہ کئے جانے کے معاملے پر تمل ناڈو کے وزیر اعلیٰ ایم کے اسٹالن نے وزیر اعظم نریندر مودی کو خط لکھا ۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

Engagement: 0

اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے لوک سبھا میں ایک سوال کے جواب میں بتایا کہ کورونا وبا کے پروٹوکول کی وجہ سے عازمین حج کے لیے امبارکیشن پوائنٹس کی تعداد 21 سے کم کر کے 10 کر دی گئی ہے۔

وقفہ سوالات کے دوران ایک ضمنی سوال کا جواب دیتے ہوئے مسٹر نقوی نے کہا کہ اس بار عازمین حج 21 امبارکیشن پوائنٹس کے بجائے 10 مقامات سے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا سے متعلق پروٹوکول کی وجہ سے امبارکیشن پوائنٹس کوکم کیاگیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کورونا وبا کے دوران دو سال سے حج نہیں ہواہے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت میں ہی عازمین حج کا کوٹہ بڑھا ہے۔ انڈونیشیا کے بعد سب سے زیادہ عازمین حج ہندوستان سے جاتے ہیں۔ توقع ہے کہ اس سال حج کاسفرہوگا۔ انہوں نے کہا کہ تمام اعلیٰ حکام اور ایجنسیاں سعودی عرب کی حکومت سے بات کر رہی ہیں۔ وہاں جو بھی پروٹوکول ہوگا ہمیں اس پر عمل کرنا ہوگا۔

دراوڑ منیتر کزگم کے ٹی آر بالو نے امبارکیشن پوائنٹس کم کئے جانے کے بارے میں سوال پوچھا تھا۔ مسٹر بالو نے کہا کہ عازمین حج کے لئے امبارکیشن پوائنٹس کی فہرست میں چنئی کو شامل نہ کئے جانے کے معاملے پر تمل ناڈو کے وزیر اعلیٰ ایم کے اسٹالن نے وزیر اعظم نریندر مودی کو خط لکھا تھا، لیکن اقلیتی امور کی وزارت کا کہنا ہے کہ اس سے تمل ناڈو حکومت کی جانب سے درخواست نہیں کی گئی۔ یہ کیسے ہوسکتا ہے؟ اس معاملے کے تعلق سے ڈی ایم کے ارکان ہنگامہ کرتے ہوئے حکومت سے وضاحت طلب کرنے لگے۔ انہوں نے اس حوالے سے وزیراعظم کو لکھا گیا خط بھی ایوان میں دکھایا۔




Source link

Leave a Reply

Your email address will not be published.